‏یوٹیلیٹی اسٹورز پر وزیراعظم ریلیف پیکچ کے تحت رحیم یار خان ریجن میں فراڈ کیس کے ملازمین کو کلین چیٹ دیدی گئی۔
کسی ملازم کو نوکری سے فارغ نہیں کیا گیا اور نہ ہی او ایس ڈی بنایا گیا-
بلکہ من پسند اور پر کشش جگہوں پر تعینات کردیا گیا تعیناتیوں کا نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا۔
یاد رہے کہ وزیراعظم ریلیف پیکج کے تحت یوٹیلٹی سٹورز پر عوام کو ریلیف دینے کے لیے 6 ارب کا پیکیج دیا
لیکن ملازمین و افسروں کی ملی بھگت سے آٹے کے سینکڑوں تھیلے بلیک میں فروخت کئے گئے۔
جبکہ یوٹییلٹی سٹورز پر آٹے اور دیگر اشیاء کی جعلی قیمت ظاہر کر کے فروخت کی گئی اس فراڈ کے انکشاف کے بعد 7 ملازمین اور افسران کے خلاف زونل آفیسر کی سربراہی میں انکوائری کے احکامات جاری کیے گئے
انکوائری کا وہی نتیجہ نکلا جو عموماً نکلتا ہے۔